Author Topic: نعتیہ مشاعرے کے لیے کہے گئے اشعار  (Read 164 times)

0 Members and 1 Guest are viewing this topic.

Offline Syed Anwar Jawaid Hashmi

  • phpBB Moderators
  • Sukhan Fehm
  • *****
  • Posts: 953
  • Karma: 61
  • S Anwer Jawad Hashmi,Poet,Author,Journalist
نعتیہ مشاعرے کے لیے کہے گئے اشعار
« on: January 09, 2017, 04:07:36 AM »
[/b][/size][/color]
ا لسلا م  و علیکم 
دبستان وارثیہ کے ردیفی نعتیہ مشاعرے کے لیے کہے گئے اشعار
Khalil Ahmed Khalil Advocate Poet Karachi
۔۔۔
پلٹ د ے گی مر ی کا یا غُلا می
مجھے مِل جا ئے گر آ قا غُلا می

غُلا می سے کیا آ ز ا د سب کو
مِٹا د ی آ پ نے بے جا غُلا می

ز ما نہ چھوڑ کے روضہ پہ آئوں
میں کا ٹُو ں آ پ کی تنہا غُلا می

غُلا ما ن ِ مُحمّد جا نتے ہیں
بھلا آ ز ا د ی کیا ہے کیا غُلامی

عطا کر دے مجھے جنّت کے بدلے
مُحمدّد کی مر ے د ا تا غُلا می

فر و ز ا ں شمع ِ آ ز ا د ی مد ینہ
جہا ں ہے ا نجُمَن آ ر ا غُلا می

جہَا ں کو آ پ نے تہذ یب دے دی
یہا ں ر ا ئج تھی فَرسُودہ غُلا می

مِٹا ئی آ پ نے یہ بد ر و ا یت
قَبِیلو ں میں جو تھی بر پا غُلا می

خلیل اِ ک ِدن ضر و ر آئے گا ایسا
کر ے گی آ پ کی دُ نیا غُلا می

آ پ = صلی اللہ علیہ وسلّم،مُحمد صلی اللہ علیہ وسلّم

خلیل ا حمد خلیلKhalil Ahmed
Parindey Mosim-e-Gull ko jahaN pukarty thay
Ajeeb  dhoop thi Saiey thaken utaartey thay